عمران خان پاکستان دشمنوں کے ناپاک ارادوں کو خاک میں ملاتا چلا جا رہا ہے۔ انڈین پراپوگنڈہ میڈیا فرما رہا ہے کہ عمران خان نے پاکستان میں بڑے پیمانے ( ہاہاہا ) پر جاری مظاہروں کے باوجودگلگت بلتستان کو صوبے کی حیثیت دے دی ہے۔ انڈیا دنیا کو یہ بتانا چاہ رہا ہے کہ سارے پاکستان میں گلگت بلتستان کو صوبائی حیثیت دینے کے خلاف مظاہرے ہو رہے ہیں۔  

ایک طرف جہاں انڈیا مقبوضہ کشمیر کے مسلماںوں پر ظلم و ستم ڈھا رہا ہے۔ ایک سال سے بھی زیادہ عرصے سے انہیں ایک قیدمیں رکھا ہے۔ اور دوسری طرف انڈیا کی گندی نظریں آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان کے علاقوں پر ہیں تاکہ پاکستان اور چین کے سی پیک پراجیکٹ کو روکا جا سکےاور تمام دریائوں کے پانی پر قبضہ ہو۔

انڈیا کی وزارت خارجہ کے ترجمان انوراگ سریواستونے ایک بیان میں کہا کہ انڈیا پاکستان کی جانب سے گلگت بلتستان کو صوبائی حیثیت دینے کو تسلیم نہیں کرتا۔ حکومت پاکستان کے پاس زبردستی اس کے زیر قبضہ علاقوں کو صوبائی حیثیت دینے کا کوئی اختیار نہیں ہے۔ پاکستان کی اس طرح کی کوششیں ، جو اس کے غیر قانونی قبضے کو چھپانےکا ارادہ رکھتی ہیں۔ ہندوستان ان علاقوں کا دارالحکومت لداخ کے ایک خطے کے ایک حصے اور پہلے ریاست جموں و کشمیر کا ایک حصہ ہونے کے طور پر دعوی کرتا ہے۔

جبکہ حقیقت میں انڈیا کو لداخ میں بھی چین سے جوتے پڑے ہیں اور دوسری بات کہ گلگت بلتستان پاکستان کا وہ علاقہ ہے جس نے خود سے آزادی حاصل کی اور پاکستان میں شامل ہوا۔ جو حصہ کشمیر کا آزاد ہوا اس کی آزادی کے لیے بھی گلگت بلتستان کے بہادر اور غیور عوام نے شہادتیں پیش کیں اور آج بھی ہمہ وقت پاکستان کی افواج کے شانہ بشانہ لڑنے کو تیار ہیں۔ 

انشااللہ عمران خان کا یہ قدم پاکستان اور گلگت بلتستان کی عوام کو مضبوط بنائے گا اور انڈیا کے ناپاک ارادوں کے سامنے سیساپلائی دیوار ثابت ہوگا۔ عمران خان زندہ باد پاکستان پائندہ باد

گلگت بلتستان کو پاکستان کا پانچواں صوبہ قرار دیئے جانے کی مکمل تقریب دیکھیں اس ویڈیو میں