Help us spread the message of change - Share with your friends

پاکستان میں جمہوریت کے ٹھیکیدار اپنی کرپشن ، دھاندلی اور جھوٹ کو سچ ثابت کرنے کے لیے بضد ہیں۔ ن لیگ نے مسلسل رٹ لگا رکھی ہے کہ چاہے ووٹ کی کاؤنٹر فائل موجود ہے کہ نہیں، ووٹ کی تصدیق ہو سکتی ہے یا نہیں لیکن ووٹ کو ٹھیک مانا جائے اور اس کو دھاندلی نہیں کہا جا سکتا۔ یہ تو وہی بات ہوئی جو پی پی والے کرتے تھے کہ ڈگری ڈگری ہوتی ہے اصلی ہو یا جعلی۔ کرپشن پر ان کا بھی تو حق ہے ۔ اسے بے شرمی کی انتہا بھی کہ سکتے ہیں اور پاکستانی عوام اب یہ فیصلہ کر چکے ہیں کہ مزید ان لوٹیروں اور دھوکے بازوں سے امید لگانا اور بھروسہ کرنا فضول ہے۔

ہرحلقے میں ہزاروں کی تعداد میں غیر تصدیق شدہ ووٹ ہیں۔ فارم چودہ اور پندرہ موجود نہیں۔ ووٹوں کے تھیلے کھلے ہوئے پائے گئے۔ اور دھاندلی کیا ہوتی ہے؟ اور ہم عمران خان کے اس مطالبہ کی مکمل حمایت کرتے ہیں کہ جب تک الیکشن دھاندلی میں ملوث ملزمان کو سزائیں نہیں دی جاتیں اگلے الیکشن میں دھاندلی روکنا نا ممکن ہے۔

Help us spread the message of change - Share with your friends