Help us spread the message of change - Share with your friends

KIDS SHOULD NOT WATCH THIS PAGE!

N league has started its crackdown on Pakistan Awami Tehreek of Dr. Tahir-ul-Qadri which has started a movement against the injustified governments in Pakistan and large scale corruption. 6 PAT workers were killed and dozens injured in clashes with police. Shots were fired openly on PAT workers. Chairman PTI Imran Khan has condemned this brutal act of Punjab government and demanded from Shahbaz Sharif to resign.

PMLN government as claims that the conflict started on removing the road blocks in front of PAT headquarter in Model Town Lahore. Dr. Tahir-ul-Qadri’s residence is also located in the same place. However it is obvious that this matter is not about removing the road blocks but actually its a planned attack using government power on the PAT workers. An attempt to shut them up. People of Pakistan are shocked and angry over the actions of PMLN and the reaction is obvious on the social media.

Despite Dr. Qadri’s criticism on PTI politics while shaking hands with parties who were part of the government such as MQM and PMLQ. PTI supporters and party leadership is with PAT workers who are struggling for a good cause and are facing a great injustice. Protest is everyone’s right and there is no wrong in saying that the whole governance system of Pakistan is effected by large scale government level corruption. We shall stand for justice in Pakistan.

 


 

Video of women shot in the face

ARVE Error: id and provider shortcodes attributes are mandatory for old shortcodes. It is recommended to switch to new shortcodes that need only url

 

عوامی تحریک کے درجنوں کارکن زخمی جبکہ 6 افراداﷲ کو پیارے ہو گئے۔ جن میں ایک خاتون بھی شامل۔

حکومت نے اپنے معمول کے مطابق کسی قسم کی ذمہ داری لینے سے انکار کر دیا ہے، سرعام بے گناہ انسانوں کا قتل کرنے کے بعدبھی کہا جا رہا ہے کہ ثابت کردیں کہ شہباز شریف نے یہ کیا ہے تو وہ اپنی کرسی چھوڑ دیتے ہیں۔ جبکہ اسی کرسی کے لیے آگ اور خون کی ہولی کھیلی گئی ہے لاہورمیں ۔ کہا یہ جا رہا ہے کہ طاہر القادری کے گھر کے سامنے سڑک پر سے رکاوٹیں ہٹانے کی وجہ سے عوامی تحریک کے کارکنوں اور پنجاب پولیس کے درمیان جھگڑا شدت اختیا ر کر گیا۔ یہ سراسر جھوٹ اور مکاری پر مبنی بیان ہے۔ یہ کس کو نہیں معلوم کہ طاہر القادری نے پاکستان آنے کا اعلان کر دیا ہے اور وہ پاکستان میں حکومت کے خلاف تحریک کا آغاز کرنے والے ہیں۔ اور اسی وجہ سے پنجاب حکومت نے سینکڑوں پولیس والوں کی نفری رکاوٹیں ہٹانے کی آڑ میں عوامی تحریک کے کارکنوں کو حراساں کرنے کی گھنونئی سازش کی۔ اور طاقت کے نشے میں عوام کے قتل عام سے بھی گریز نہیں کیا گیا۔

تحریک انصاف کے چیرمین عمران خان صاحب نے فوری طور پر شہباز شریف سے استعفٰی کا مطالبہ کرتے ہوئے شدید الفاظ میں ن لیگ کے اس قدم کی مزمت کی ہے۔

اس انتہائی افسوس ناک واقعے کے بعد محسوس ہوتا ہے کہ شریفوں کے دن تھوڑے ہیں اور یہ لوگ جلد ہی اپنے انجام کو پہنچیں گے۔ انشااﷲ!

 

Public Feedback From Twitter on Model Town Violence against PAT

 

Help us spread the message of change - Share with your friends