Help us spread the message of change - Share with your friends

اﷲپا ک کے فضل و کرم سے سیالکوٹ جلسہ انتہائی کامیاب رہا۔ میڈیا نے پوری کوشش کی کہ کسی نہ کسی طرح سے جلسہ کو متنازعہ بنایا جائے۔ بار بار جلسے میں شریک خواتین سے پوچھا گیا کہ کیا وہ انجوائے کرنے آئیں ہیں ۔ تحریکِ انصاف کے سپورٹرز نے بھرپور جوابات دیے اور بتایا کے اتنی گرمی میں وہ لوگ انصاف اور الیکشن دھاندلی کے خلاف نکلے ہیں اور عمران خان کی کال پر کبھی بھی کہیں بھی جانے کو تیار ہیں۔ اسلام آباد اور فیصل آباد کی طرح سیالکوٹ کی عوام نے جلسے میں بڑی تعداد میں شرکت کر کے عمران خان پر اپنے اعتماد کا اظہار کیا۔ عوام کا جوش اور جزبہ دیکھنے سے تعلق رکھتا تھا ۔ 

جلسے سے تحریک انصاف سیالکوٹ کے نمائندوں نے جن میں عمرڈار اور دوسرے، تحریک انصاف کی اعلیٰ قیادت جن میں ابرار الحق، شاہ محمود قریشی، اور جاوید ہاشمی شامل ہیں ، شیخ رشید اور ہمیشہ کی طرح سب سے آخر میں چیرمین عمران خان نے خطاب کیا۔ جلسے سے خطاب کرتے ہوئے تحریک انصاف کی قیادت نے ایک مرطبہ پھر حکومت کو کڑی تنقید کا نشانہ بنایا اور ایک سال گزرنے کے باوجود الیکشن دھاندلی کے معاملے پر کوئی پیش رفت نہ کرنے کو سراسر بدنیتی قرار دیا۔ الیکشن دھاندلی سے متعلق پیش رفت سے آگاہ کیا گیا جس میں بتایا گیا کہ کیسے حکومت سرکاری اداروں پر اپنے پسندیدہ افسر لگا کر اب ووٹوں میں ادل بدل کر رہی ہے۔ خانصاحب نے کہا کہ حکومت اپنی دھاندلی چھپانے کے لیے مزید دھاندلی کر رہی ہے، جیسا ایک جھوٹ چھپانے کے لیے دس جھوٹ اور بولنے پڑتے ہیں۔ شاہ محمود قریشی نے اس صورتحال پر نادرا کے دفتر کے سامنے احتجاج کی دھمکی بھی دی۔ 

عمران خان نے اپنے خطاب کے دوران ایک سرکاری افسر کی ریکارڈنگ بھی سنائی جو حافظ آباد میں ہونے والی ضمنی انتخابات میں سرکاری افسر ہونے کے باوجود ن لیگ کی الیکشن مہم چلا رہا تھا۔خانصاحب نے ججوں اور سرکاری افسروں کو اپنی ڈیوٹی دیانتداری سے سرانجام دینے کا پیغام دیا۔دوسری طرف خانصاحب نے جلسے پر موجود ہزاروں لاکھوں کی تعداد میں موجود عوام کو یقین دلایا کہ انصاف کی یہ تحریک رکنے والی نہیں اور انشااﷲنیا پاکستان بن کر رہے گا۔ انشااﷲ!

[tw_divider type=”space” height=”20″]

Imran Khan Speech

ARVE Error: id and provider shortcodes attributes are mandatory for old shortcodes. It is recommended to switch to new shortcodes that need only url


[tw_divider type=”space” height=”20″]

Some photographs from the Jalsa

sialkot-tsunami

Forget the chair count

Revolution is coming!

Revolution is coming!

This is the DPO Rai Zameer (without any Zameer) who was running PMLN election campaign

This is the DPO Rai Zameer (without any Zameer) who was running PMLN election campaign

Imran Khan addressing the charged up crowd

Imran Khan addressing the charged up crowd

Dar Brothers the organizers from PTI Sialkot

Dar Brothers the organizers from PTI Sialkot

Help us spread the message of change - Share with your friends